سندھ حکومت نے ٹائیگر فورس کو ریلیف مہم میں شامل نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا

چیف سیکریٹری سندھ نے کمشنرز اورڈپٹی کمشنر کو خط لکھ کر ہدایت جاری کی تھی کہ بتایا جائے کہ ٹائیگر فورس کو راشن تقسیم کے لیے کیسے شامل کیا جائے، اب سندھ کے وزیر امتیاز شیخ نے اُس خط سے لاتعلقی کا اظہار کر دیا ہے۔

امتیاز شیخ نے کہا ہے کہ کسی بھی سیاسی جماعت کا ورکر ریلیف آپریشن کا حصہ نہیں بنے گا، ٹائیگر فورس سیاسی ورکروں پر مشتمل ہے۔ تمام کمیٹیاں، این جی اوز اور لیڈی ہیلتھ ورکرز آپریشن کا حصہ ہیں۔ انہوں نے اعلان کیا کہ کسی بھی پارٹی کی سیاسی فورس ہو، اسے شامل نہیں کریں گے۔

ٹائیگر فورس میں سیاسی ورکرز ہیں، جماعت اسلامی، (ن) لیگ والے بھی کہیں گے ہمارے ورکرز کو شامل کیا جائے۔

عمران خان نے ملک بھر میں راشن کی تقسیم ، کھانے کی فراہمی اور کورونا سے آگاہی کے لیے رضاکاروں کی ٹائیگرفورس قائم کرنے کا اعلان کیا تھا۔عمران خان کی اعلان کردہ ٹائیگر فورس کی پیپلزپارٹی اور ن لیگ کی طرف سے سخت مخالفت دیکھنے میں آئی ہے اور اسے سیاسی فورس قرار دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں