انٹربینک میں ڈالر مزید مہنگا ہوگیا

انٹربینک میں ڈالر240 روپے کی تاریخی حد عبورکرگیا ہے، بدھ کو انٹر بینک میں ڈالر1 روپے 9 پیسے مزید مہنگا ہوکر 240 روپے سے تجاوز کرگیا۔

اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت فروخت 246 روپے سے تجاوز کرگئی، رواں سال کے 6 ماہ میں ڈالر کی قیمت میں 57.07 روپے کا اضافہ ہوا جب کہ گذشتہ ساڑھے تین سال میں ڈالر 58 روپے مہنگا ہوا۔

ڈالر نے 7 ہفتوں میں بلند ترین سطح پر پہنچنے کے سابقہ ریکارڈ توڑ دئیے۔ آئی ایم ایف اور سعودی عرب کے سوا 4 ارب ڈالر کا ریلیف ملنے کے بعد بھی امریکی ڈالر کی قدر روکی نہ جاسکی۔

ڈالر مہنگا ہونے سے پاکستان پر قرضوں کے بوجھ میں 2900 ارب روپے کا اضافہ ہوا۔ ڈیلرز کےمطابق اگست میں 1 ارب ڈالر کی ریکارڈ فوڈ امپورٹ سے ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے۔ ڈیلرز کا کہنا تھا کہ امپورٹرز کو بینکوں سے ڈالرز دستیاب نہیں ہیں،قیمت بڑھتی دیکھ کر ایکسپورٹرز نے اپنے ڈالرز روک لئے ہیں۔

کرنسی ڈیلرز کا کہنا تھا کہ سیلاب کے بعد درآمدی ضروریات کے لئے ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے اور آئی ایم ایف کی ایکسچینج ریٹ کو فری فلوٹ رکھنے کی شرط نے بھی صورتحال دشوار کردی ہے۔


subscribe YT Channel

install suchtv android app on google app store

Source link
www.suchtv.pk

اپنا تبصرہ بھیجیں