پوسٹ مارٹم میں ارشد شریف کے جسم پر تشدد کے12 نشانات ملے، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف

پمز اسپتال کے ڈائریکٹر ڈاکٹر خالد مسعود نے تصدیق کی ہےکہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق مقتول صحافی ارشد شریف کے جسم پر زخموں کے نشان ہیں، کچھ ناخن بھی نہیں، تصاویر پمز اسپتال سے ہی لیک ہوئی ہیں۔

ڈاکٹر خالد مسعود نے بتایا کہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق ارشد شریف کی دائیں کلائی پر تشدد کے نشانات ملے، سیدھے ہاتھ کی 4 انگلیوں کے ناخن نہیں تھے، بائیں ہاتھ کی انگلی پر بھی زخم کا نشان ملا، اس طرح 12 مختلف جگہوں پر زخم کے نشانات ملے، اس حوالے سے فارنزک ہو رہا ہے جس کی رپورٹ میں سامنے آسکےگا کہ کتنا تشدد ہوا، ہوا بھی یا نہیں ہوا ۔

ڈائریکٹر پمز اسپتال کا کہنا تھا کہ ہمیں کینیا میں ہوئے پوسٹ مارٹم کی رپورٹ نہیں ملی، ہمیں نہیں پتا کہ انہوں نے پوسٹ مارٹم کے لیے جسم کے کس حصے کو استعمال کیا، ہم نے جب دیکھا تو ناخن نہیں تھے، ہوسکتا ہےکینیا میں پوسٹ مارٹم کے دوران ناخن نکالےگئے ہوں۔

ڈاکٹر خالد مسعود نے تصدیق کی کہ صحافی ارشد شریف کی تصاویر پمز اسپتال سے ہی لیک ہوئیں، اس حوالے سے ہم تحقیق کررہے ہیں کہ یہ کیسے ہوا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ قانون کے تحت ابتدائی رپورٹ پولیس کو دے دی ہے، ان کے اہلخانہ میں سےکوئی آئےگا تو رپورٹ دے دیں گے، ان کی اہلیہ نے پوسٹ مارٹم کے لیے درخواست کی تھی لیکن پھر انہوں نے رابطہ نہیں کیا۔


subscribe YT Channel

install suchtv android app on google app store

Source link
www.suchtv.pk

اپنا تبصرہ بھیجیں